اشتیاق ڈرائیور بنام ابن صفی

, اشتیاق ڈرائیور بنام ابن صفی

یومِ صفی 26 جولائی 2021 ء پر پرستاروں کی خدمت میں ایک دلچسپ خط اور اس کے جواب کا عکس

ابن صفی کے پرستاروں میں صرف ادبی شخصیات ہی شامل نہیں تھیں بلکہ معاشرے کے ہر طبقے میں ان کے لیے محبت پائی جاتی تھی۔ اللہ ہی جانتا ہے کہ وہ کس طرح ہر ایک کے ذوق کی تسکین کا سامان کر دیا کرتے تھے ۔۔۔ اس خط سے آپ کو اندازہ ہو گا۔۔۔ یہ خط ایک موٹر ڈرائیور نے ٹنڈو الہ یار سے بھیجا۔ ڈرائیور ناخواندہ تھا مگر اس نے ایک قمر صاحب کو راضی کیا کہ وہ اسی زبان اور لہجے میں خط لکھیں جیسے اشتیاق بولتا ہے۔ قمر صاحب نے نوٹ لکھا:
” میرے محترم ابن صفی – یہ خط آپ کے لیے ایک ڈرائیور کے جذبات ہیں جو لکھا پڑھا کچھ نہیں مگر آپ کی لکھی ہوئی کتابوں کی لائیبریری کا مالک ہے۔”

اشتیاق ڈرائیور بنام ابن صفی


خوا لاکا مڑا
ابن صفی
سامالیکم
خدا کا کسم اے تمارا ادب کا سب کتاب “دلیر مجرم 1” تا “بلیک اینڈ وہائٹ” تک کا ام نے پڑا کر سنا -: بئی مڑا تمارا کلم کا جواب نئی -:
مگر مڑا کبی کبی ام مسوس کرتا کے تم کو کط لکائے مگر اِدر اپنے طرف لکنے والا لوگ نئی ملتا تا۔۔۔ ام چاتا تا کہ ایسا لکے جیسا مڑا اپن لوگ کا زبان اے -:
کئی پڑا لکیلا ملا مگر وہ بولتا “مترم” لکو “جناب عالی” لکو -:
کیوں مڑا؟ کیا تم مترم اے؟ کیا تم عالی جناب اے؟؟
تم ام لوگ کی طرا کا انسان اے
بس تم لکتا اور بوت اچا لکتا -: اللہ تم سے اچا لکائے -:
ام گاڑی چلاتا اور بوت اچا چلاتا -: اللہ ام سے چلائے -:
تم مینت کرتا – ام بی کرتا -: مڑا پر تمارا اور امارا کیا فرک۔۔۔۔!
ام تو بس یہ جانتا کے -:
“انسان با ز وکت ایسا ایسا آلت سے دوچار اوتا جیسا کے ام لوگ عالمِ جوانی میں کسی نگاہ کا شکار کرتا یا بنتا تو موبت کا مذاک بناتا ۔ پر ام لوگ میں کوئی کا موبت رنگ لاتا تو ام لوگ سمجھتا کے امارے لوگ کا جذبات کلٹی کایا -: پر ام لوگ بھی بدلتا اس وقت تک کے ام لوگ کا جذبات کسی نا کسی شکل سے ام لوگ پے اپنا قبضہ رکتا مگر ایرت تو اب اے کے ام لوگ عملی زندگی کے اندر داخل ہؤا تو کسی گیر چیز کے لیے وہ جذبات اتا شدید اوا کے ام لوگ نے مجبور ہو کر تم لوگ کو یہ خط لکا دیا -: تم مڑا انسے گا سئی۔۔۔ انسو۔۔۔ ام نے جو لکانا تا لکا دیا “
ام لوگ کا “فریدی” اور “اَمید” کدر کلٹی کایا؟؟ -:
خدا حافظ -: ساما لیکم -:
فکت تمارے لوگ کا شائک -:
ایک اجنبی اجنبی ڈرائور -:
اشتیاق -:
مؤرخہ 27 مارچ 1974ء

, اشتیاق ڈرائیور بنام ابن صفی

ابن صفی کا جواب


ابن صفی صاحب کو یہ خط اگلے ناول عمران سیریز نمبر 70، ” نادیدہ ہمدرد” کی اشاعت سے ذرا پہلے ہی موصول ہؤا ہوگا کیونکہ انہوں نے اس سے متاثر ہو کر پیشرس میں اشتیاق صاحب کا ذکر کیا اور ان کو مخاطب کر کے جواب دیا:
“اب میں اپنی کتابیں پڑھوا کر سننے والے ایک موٹر ڈرائیور دوست سے مخاطب ہوں جنہوں نے ویسیس ہی زبان میں مجھے خط لکھا ہے جیسی وہ بولتے ہیں —- پیارے دوست نہ میں تم سے بڑا ہوں اور نہ تم مجھ سے بڑے ہو۔ البتہ ہم دونوں ایک دوسرے کے لیے بہت ضروری ہیں تم میرے لیے محنت کرتے ہو اور میں تمہارا دل بہلاتا ہوں۔ یہاں کوئی کسی سے بڑا نہیں ہے۔ سب اپنے اپنے فرائض ادا کر رہے ہیں ۔ اگر کوئی بڑائی کے خبط میں مبتلا نظر آئے تو اسے ایک “سنجیدہ احمق” سمجھ کر نظر انداز کر دو-“
والسلام
ابن صفی
6-4-74
(رب ارحمھما کما ربیانی صغیراً)

, اشتیاق ڈرائیور بنام ابن صفی
شیئر کریں
مدیر
مصنف: مدیر
لفظ نامہ ڈاٹ کام کی اداریہ ٹیم کے مدیران کی جانب سے

کمنٹ کریں