افسانے

اردو ادب : افسانے، ناول، کہانیاں اور دیگر ادبی نثری اصناف ِ سخن

افسانہ : نیم بے اولاد

افسانہ : نیم بے اولاد

افسانہ نگار : اشرف گِل گاؤں کے لوگوں کا تو یہی خیال تھا۔ کہ سراج دین ( عرف سا جھا) کی اب شادی نہیں ہونے والی ۔ کیونکہ اسکا کوئی سگا بھائی اور نہ ہی کوئی بہن تھی ۔ والدین جب تک زندہ تھے ۔ ان کے سہارے ...

عشاء/isha

عشاء

افسانہ : عشاء افسانہ نگار : سید کامی شاہ، کراچی سونے کے ٹھیکروں سے کھیلتے لڑکوں سے لڑائی کے بعد میں بھاگا تھا اور کسی سنگِ راہ سے ٹھوکر کھا کر منہ کے بل زمین پر گرا تھا۔دھیان سے مُنا۔۔۔۔،، کسی شفیق ہا...

زندگی کا جلتا الائو

زین العابدین خاں چار بجے شام کا وقت تھا۔قاسم خاں کو کِسی نے بتایا تھا کہ زبیدہ دادی کی طبیعت بہت خراب ہے ،بچنے کی اُمید کم ہے ۔زبیدہ دور کے ایک گائوں سیتا پور میں تھی ۔وہ تھوڑی دیر کے لیے پریشان ہوا ،...

انجم عثمان /anjum usman

تلاشِ مشکِ شگفتگی

خاکہ نگار : غضنفر دہلی کی ادبی محفلوں میں کچھ لوگ طول طویل مقالے پڑھ کر اور لمبی چوڑی تقریرں فرماکر بھی اپنی موجودگی کا احساس نہیں دلاپاتے وہیں ایک شخص ایسا بھی ہے جو محفل میں ٹھیک سے دکھائی بھی نہیں ...

ادھوری عورت

افسانہ : ادھوری عورت

افسانہ نگار : محمد شمشاد شاداب کی ماں برسوں سے بستر مرگ پر پڑی گھٹ گھٹ کر مر رہی تھی اور وہ پیروں کے پاس بیٹھی اس کے لئے دعا کر رہی تھی کاش خدا…… اتنے میں اس کی ماں نے شاداب کو اپنی جانب مخاطب کرتے ہو...

کسان/kisan

نظم : کسان آندولن

ڈاکٹر صالحہ صدیقی جن ہاتھوں میں ہل ہوتے تھےاب دھرنا دینے بیٹھے ہیںجن کی مشکل کو حل کرنا تھاوہ لاٹھی ڈنڈا کھاتے ہیںکانٹے بچھا کر راہوں میںپانی برسا کر راہوں میںگولی چلا کر سینے میںکہتے ہیں چلو ہم بات ک...

پُراسرار بندے/ولی اللہ

یہ تیرے پُراسرار بندے

افسانہ نگار : نورالحسنین اُس کے دماغ میں انجیل مقدس کے الفاظ گونج رہے تھے ، ’’ بدن میں ایک ہی عضو نہیں ، بلکہ بہت سے ہیں ، اگر پاؤں کہے چونکہ میں ہاتھ نہیں اس لیے بدن کا نہیں ، تو وہ اس سبب سے بدن سے...

افسانہ: چھید

افسانہ: چھید

افسانہ نگار : مائرہ انوار راجپوت جتنی سفاک زندگی میرے ساتھ تھی اس سے کہیں زیادہ سفاک اور ظالم میں خود اپنے ساتھ تھی۔۔۔۔ایک ہی تجربہ بار بار ہونے کے باوجود خوش فہمیوں کی اونچی اونچی مگر کمزور بنیاد وال...

سونے کی انگوٹھی

سونے کی انگوٹھی

افسانہ نگار : زین العابدین خاں میرے گائوں میں جو آدمی ممبئی میں جاکر ٹیکسی چلانے لگتا تھا اُسے سب لوگ اچانک سیٹھ کہنے لگتے تھے۔پہلے تو اِس گائوں سے لوگ کلکتہ پولیس میں نوکری کیے ،اِس کے بعد بہار پولی...