تنقید و تحقیق

تنقیدی اور تحقیقی مضامین کا مطالعہ کریں

تبسم اور میرا سچ

تبسم اور میرا سچ

تحریر : مشرف عالم ذوقی ہم ہیں تو کہانیاں ہیں۔ ایک وقت آتا ہے جب کہانیاں پیچھے چھوٹ جاتی ہیں۔ نیما، مہک احمد اور بھی کتنے نام…. یہ سب پیچھے چھوٹ گئے۔ اب ہمارا ایک ٢٥ سال کا بیٹا ہے۔ عشق ابھی بھی آواز د...

ادب اطفال

ادب اطفال اور آج کے ادیب : ایک جائزہ

مضمون نگار: ذوالفقار علی بخاری ادب اطفال بچوں کے لئے لکھا جانے والا ادب ہے۔وقت کے ساتھ ساتھ اس میں بھی مختلف موضوعات پر لکھا جا رہا ہے۔اگرچہ وقت کے جدید تقاضوں کے مطابق لکھنے والے کم ہیں مگر جو بھی لک...

خاکہ نگاری/khaka nigari

فن ِ خاکہ اور مجتبیٰ حسین

مضمون نگار : صفدر امام قادری ۱۹۸۱ء میں مجتبیٰ حسین کے خاکوں کا پہلا مجموعہ شایع ہواجس کا نام’’ آدمی نامہ‘‘ تھا۔نظیر اکبر آبادی سے اس کتاب کا عنوان مستعار لینے کی بات قبول کرتے ہوئے انھوں نے پڑھنے وا...

آزادی کی جد و جہد میں اردو شعرأ کا کردار

آزادی کی جد و جہد میں اردو شعرأ کا کردار

مضمون نگار : ڈاکٹر صالحہ صدیقی ادب سماج کا آئینہ ہوتا ہے۔جس میں ہر زمانے کی سچی تصویر دیکھی جا سکتی ہے ہمارے ادباء و شعرأ کے کلام۔ و تحاریر میں بھی یہی ترجمانی دیکھنے جو ملتی ہے۔انھوں نے اپنے قلم کے ذ...

ادب اطفال/ادب اطفال

ادب اطفال اورجدت پذیری

تحریر: ذوالفقار علی بخاری ایک زمانہ تھا جب ادب اطفال میں مخصوص رجحان سے ہٹ کر کچھ لکھنا اورنئے تجربات کرنا عجیب سی نظروں سے دیکھا جاتا تھا مگر پھر ادب اطفال میںنت نئے رجحانات کاآغاز یوں ہوا کہ سب نے ...

اللہ میاں کا کارخانہ

اللہ میاں کا کارخانہ ایک ٹائم مشین

مضمون نگار : حمیرا عالیہ ناول ‘اللہ میاں کا کارخانہ’ پہ بہت سی تحریریں لکھی جا چکی ہیں۔ جن میں تاثراتی سے لے کر تجزیاتی و تنقیدی ہر کسی قسم کی تحاریر شامل ہیں۔ لیکن پھر بھی کہیں نا کہیں مج...

مردہ خانے میں عورت

مردہ خانے میں عورت : فاشزم کو للکارتا ناول

مضمون نگار : عمران عاکف خان جدید ہندوستان میں فاشزم دسمبر میں آیا جب لوگوں کو غسل کیے کئی کئی دن ہوجاتے ہیں اور ان کے کپڑے کالے پڑجاتے ہیں اور اسے لانے والے خانہ بدوش تھے جنھیں ’گھومنتو‘کہا جاتاتھا او...

پریم چند کا مطالعہ کیسے کریں؟

پریم چند کا مطالعہ کیسے کریں؟

مضمون نگار : صفدر امام قادری پریم چند اردو اور ہندی کے ان ادیبوں میں سرِفہرست ہیں جن کے پڑھنے والوں کا دائرۂ اثر روز بروز بڑھتاگیا۔ ِان زبانوں کے مشترکہ ادبی منچ پر ۱۹۳۶ ء میں پریم چندکی جو اہمیت تھی...

تجھ بن ذات ادھوری ہے : مختصر جائزہ

تجھ بن ذات ادھوری ہے : مختصر جائزہ

مضمون نگار: محسن اسرار، کراچی یہ کامی شاہ کے شعری مجموعہ کا نام بھی ہے اور ایک اچھا مکالمہ بھی۔ اگر ہم اس فریز کا منطقی جائزہ لیں تو کامی شاہ کی شاعری کا بہت قریب سے تجزیہ کرسکتے ہیں۔ اس طرح غائب اور ...