ہلدی کے فوائد اور صحت یابی

ہلدی کے فائدے

ہلدی (کرکوما لونگا) ، صدیوں سے ایشیاء میں مصالحہ کے طور پہ استعمال کیا جاتا ہے ، حالیہ کئی عشروں میں مغرب میں بھی اس کی مقبولیت بڑھی ہے ، نہ صرف یہ سالن میں ڈالا جاتا ہے بلکہ اس سے صحت کے کئی فوائد حاصل کئے جاتے ہیں ۔ یہ ۤایوروید میں بھی بیحد اہمیت کا حامل ہے ۔

ہلدی ایک پودے کی جڑ ہے ۔ ہلدی چین اور ہندوستان میں کھانا پکانے ، رنگنے ، کاسمیٹکس اور روایتی ادویات میں قدیم دور سے استعمال کی جاتی ہے ۔

ہل فائدہ پہنچانے والی جڑی ہے ۔یہ اینٹی آکسیڈینٹ ہے دل کی بیماری ، آنکھوں کی بیاری اور الزائمر سے بچنے کی صلاحیت رکھتی ہیں۔ سوزش ،گٹھیا کی بیماری میں بھی مفید ہے ۔ ہلدی کینسر کے خطرے یا پھیلاؤ کو بھی کم کرتی ہے۔

سوزش سے نجات کا قدرتی ذریعہ

جسم میں سوزش ایک عام بیماری ہے۔ہلدی بیکٹیریا ، وائرس اور چوٹوں کی وجہ سے ہونے والے نقصان کی مرمت کرتا ہے۔ تاہم ، طویل مدتی سوزش زیادہ تر دائمی حالات جیسے دل کی بیماری اور کینسر میں ملوث ہے ، لہذا اس پر قابو پایا جانا چاہئے۔ ہلدی میں کرکومین ثابت ، مضبوط سوزش کی خصوصیات رکھتے ہیں جو جسم میں سوزش کو روکتے ہیں۔

ہلدی ایک طاقتور اینٹی آکسیڈینٹ ہے

آکسیجن فری ریڈیکلز جو کیمیائی طور پر فعال ہوتے ہیں اور جسم کے خلیوں کو نقصان پہنچاتے ہیں۔ ہلدی ان کے اثرات کو کم کرتا ہے ۔ سوزش کے ساتھ ساتھ فری ریڈیکل کے نقصان سے بچاتا ہے ۔ قلبی امراض کی روک تھام میں بھی مددگار ہے ۔ ہلدی میں موجود اینٹی آکسیڈینٹ موتیابند ، گلوکووما اور میکولر کا خطرہ بھی کم کرتا ہے۔

3۔ کینسر سے بچائو

جانوروں پہ متعدد ریسرچ میں یہ بات پائی گئی کہ ہلدی کینسر پر بہت تیزی سے اثر کرتی ہے ۔ ماہرین نے یہ پایا ہے کہ یہ ایک اندرونی سطح پر کینسر کی تشکیل ، نمو اور نشوونما کو متاثر کرتا ہے۔ تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ یہ کینسر کے پھیلاؤ کو کم کر سکتا ہے اور کینسر والے خلیوں کی موت میں معاون ثابت ہوسکتا ہے۔ ہلدی اور کرکومین کچھ کارسنجنوں کے اثرات ، جیسے پروسیسرڈ فوڈ میں استعمال ہونے والے کچھ اضافی اجزاء کو بھی روک سکتے ہیں۔

جلد کا تحفظ

ایک تحقیق کے مطابق ہلدی جلد کے لئے بیحد مفید ہے ۔ اسے ابٹن کے طور پہ زمانہ قدیم سے استعمال کیا جاتا ہے ۔ یہ رنگ کو نکھارتا تو ہی ساتھ ہی جلد کی کئی بیماریوں کو بھی دور کرتا ہے ۔ جلد میں قدرتی چمک بھی واپس لانے میں ہلدی مددگار ہے ۔

دماغی صحت کے لیے شاندار

تحقیق سے پتہ چلا ہے ہلدی دماغ میں خون کی رکاوٹ کو دور کرتا ہے ۔اور الزائمر جیسی بیماری سے بچانے میں مدد گار ہے ۔ یہ سوزش کو کم کرنے کے ساتھ ساتھ دماغ میں پروٹین پہنچاتا ہے۔ یہ مر چکے ٹیشوز کی مرمت کرتا ہے ۔ الزائمر کی بیماری میں مبتلا افراد کو ہلدی کا استعمال ضرور کرنا چاہئے ۔۔ 60 مریضوں کے ایک اور مطالعے سے پتہ چلتا ہے کہ دماغ میں نیوروٹرو فک عنصر (اس کیمیائی کی کم سطح کو افسردگی سے منسلک کیا جاتا ہے) کی سطح کو بڑھاوا دینے سے ہلدی افسردگی کے علاج میں اینٹی ڈپریسینٹ کی طرح موثر ہے ۔

حالانکہ موجودہ تحقیق کا بیشتر حصہ لیب میں یا جانوروں پر کیا جارہا ہے ، اس کے نتائج حوصلہ افزا ہیں اور یہ حیرت انگیز مسالہ ہماری صحت کو بہتر بنانے می بیحد مددگار ہے

ہلدی کا زیادہ سے زیادہ استعمال

ایک حالیہ تحقیق میں ہلدی کے استعمال کے مختلف طریقوں پر غور کیا گیا ہے۔ نتائج سے ظاہر ہوا ہے کہ ہلدی کو تیل کے ساتھ کھانا پکانے سے آپ کے جسم کو زیادہ سے زیادہ ککرم جذب کرنے میں مدد مل سکتی ہے۔ یہ سوچا جاتا ہے کہ جب کرکومین چربی کے ساتھ جڑ جاتا ہے ، جیسے زیتون یا ناریل کے تیل میں تو یہ آنت میں آسانی سے جذب ہوجاتا ہے۔ اور یہ بھی ہوسکتا ہے کہ اس طرح سے روزانہ لی جانے والی معمولی مقدار بھی آپ کی صحت کے لئے فائدہ مند ثابت ہوسکتی ہے۔

لہذا جب کہ ہلدی کی شفا یابی کی خصوصیات اور صحت سے متعلق فوائد کے بارے میں بہت سارے دعوے ہوتے رہے ہیں ، لیکن ریسرچر ابھی تک اس بات پر قائل نہیں ہے کہ یہ کتنے سچ ہیں۔ غیر معمولی دعوے جیسے “ہلدی کینسر کا علاج کر سکتی ہے” ایک چٹکی بھر نمک کے ساتھ لیا جانا چاہئے۔ اگر یہ سچ سمجھنا بہت اچھا لگتا ہے تو یہ شاید سچ ہے۔

ہمیں کیا معلوم کہ متوازن غذا کے حصے کے طور پر ، تیل کے ساتھ ہلدی کھانا پکانا اس مصالحے سے زیادہ سے زیادہ فائدہ اٹھانے کا بہترین طریقہ ہوسکتا ہے۔

شیئر کریں

کمنٹ کریں