خالص شہد کے 6 بڑے فائدے

شہد honey

خالص شہد کو پوری تاریخ میں گھریلو علاج کے طور پر استعمال کیا جاتا ہے اور اس میں متعدد صحت کے فوائد ہیں اسکا طب نبوی میں ایک خاص مقام ہے ۔ یہ کچھ اسپتالوں میں زخموں کے علاج کے طور پر بھی استعمال ہوتا ہے۔ شہد کی آیوروید میں بہت خاص اہمیت ہے

گروسری اسٹورز میں آپ کو ملنے والا بیشتر شہد پیسورائزڈ ہے۔ اسے تیز اچ پہ گرم کیا جاتا ہے تاکہ شہد زیادہ دن تک خراب نہ ہو سکے ۔ جس سے شہد کا رنگ اور شکل تو بہتر دکھنے لگتا ہے مگر کرسٹاللائزیشن ہٹ جاتا ہے۔ اس عمل میں بہت سارے فائدہ مند غذائی اجزاء بھی ختم ہو جاتے ہیں ۔ ڈبہ بند شہد کا استعمال کم سے کم کرنا چاہئے ۔ کوشش یہ کیجئے کہ کہیں سے تازہ اور خالص شہد حاصل کرکے اسکا استعمال کریں ۔

1۔ صحت بخش اجزاء کا ذخیرہ

خالص شہد میں پودوں کے کیمیائی مادوں کی ایک صفت ہوتی ہے جو اینٹی آکسیڈینٹس کا کام کرتی ہے۔ شہد کی کچھ اقسام میں پھل اور سبزیاں بیحد اینٹی آکسیڈینٹ ہوتی ہیں۔ اینٹی آکسیڈینٹس آزاد ریڈیکلز کی وجہ سے آپ کے جسم کو سیل کے نقصان سے بچانے میں مدد کرتے ہیں۔

آزاد ریڈیکل عمر بڑھنے کے عمل میں اہم کردار ادا کرتے ہیں اور دائمی بیماریوں جیسے کینسر اور امراض قلب کی نشوونما میں بھی اہم کردار ادا کرتے ہیں۔ تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ شہد میں موجود اینٹی آکسیڈینٹ مرکبات جو پولیفینولز کہتے ہیں وہ دل کی بیماری سے بچنے میں مدد کرتے ہیں ۔

2۔ اینٹی بیکٹیریل اور اینٹی فنگل خواص

تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ کچا شہد نقصان دہ بیکٹیریا اور فنگس کو مار سکتا ہے۔ اس میں قدرتی طور پر ہائیڈروجن پیرو آکسائیڈ ، ایک اینٹی سیپٹیک شامل ہے۔ اینٹی بیکٹیریل یا اینٹی فنگل کی حیثیت سے اس کی تاثیر شہد کے لحاظ سے مختلف ہوتی ہے ، لیکن یہ اس طرح کے انفیکشن کے لئے دوسرے قسم کے علاج سے زیادہ اثر انگیز ہے ۔

3۔ زخموں کا علاج

شہد کو زخموں کے علاج کے لئے قدیم زمانے سے استعمال کیا جاتا ہے کیونکہ یہ ایک جراثیم کو تیزی سے مارتا ہے اور نئے ٹشوزکی تخلیق نو میں بھی مدد کرتا ہے۔

تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ شہد حیرت انگیز طور پہ شفا بخش ہے ۔ یہ کسی بھی قسم کے زخموں کو تیزی سے بھرتا ہے اور انفیکشن کو کم کرتا ہے۔ اس بات کو ذہن میں رکھیں کہ اسپتال میں جو شہد استعمال ہوتا ہے وہ میڈیکل گریڈ ہوتا ہے ، اس کا معنی ہے کہ اس کا معائنہ کیا جا چکا ہے اور جراثیم کُش ہے۔ اسٹور سے خریدنے والا شہد بھروسے مند نہیں ہوتا۔

4۔ Phytonutrient پاور ہاؤس

Phytonutrients پودوں میں پائے جانے والے وہ اجزاء ہیں جو پودوں کو نقصان سے بچانے میں مدد دیتے ہیں۔ مثال کے طور پر ، کچھ کیڑے مکوڑوں کو دور رکھتے ہیں یا پودوں کو الٹرا وایلیٹ تابکاری سے بچاتے ہیں۔

شہد میں موجود فائٹنٹرینٹ ، اینٹی آکسیڈنٹ خصوصیات کے ساتھ ساتھ اینٹی بیکٹیریل اور اینٹی فنگل صلاحیت بھی رکھتے ہیں۔ ان کے بارے تحقیق سے یہ بات ثابت ہوئی ہے کہ کچے شہد میں مدافعتی قوت کو بڑھاوا دینے اور اینٹینسیسر کے فوائد ہیں۔ بھاری پروسیسنگ ان قیمتی غذائی اجزا کو ختم کرتی ہے۔

5۔ ہاضمے میں مفید

اسے ہاضمہ بہتر بنانے کے لئے بھی استعمال کیا جاتا ہے ۔ نظام ہاضمہ کو درست کرنے کے لئے استعمال ہوتا ہے ، اگرچہ اس پہ زیادہ تحقیق نہیں ہوئی ہے کہ یہ کس طرح کام کرتا ہے اور کتنا اثردار ہے ۔ یہ ہیلی کوبیکٹر پیلیوری (H. pylori) بیکٹیریا کے علاج کے طور پر موثر ثابت ہوا ہے ، اگرچہ ، پیٹ کے السر کی ایک عام وجہ ہے۔

یہ ایک طاقتور پری بائیوٹک بھی ہے ، مطلب یہ ہے کہ شہد کے استعمال سے آنتوں میں رہنے والے اچھے بیکٹیریا کی پرورش ہوتی ہے ، جو نہ صرف نظام ہضم بلکہ مجموعی صحت کے لئے اہم ہیں۔

6۔ گلے میں سوجن

زکام ہے؟ ایک چمچ شہد آزمائیں۔ شہد گلے کے انفیکشن کو دور کرنے کے لئے ایک پرانا طریقہء علاج ہے۔ جب سردی سردی وائرس کے وائرس لگ جائیں تو اسے نیبو کے ساتھ گرم چائے میں شامل کرکے استعمال کریں۔

یہ کھانسی کو فوری روکتا ہے۔ تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ شہد اتنی ہی مؤثر ہے جتنا کہ انسداد کھانسی کی دوائیوں میں عام اجزاء ڈیکسٹرمتھورفن۔ سیدھے سیدھے ، ایک یا دو چائے کا چمچ لیں۔

شیئر کریں

کمنٹ کریں