انٹرنیٹ کے فائدے

آج کے اس ترقی یافتہ زمانے میں انٹرنیٹ نے انسان کی زندگی کو بہت ہی آسان اور علم سے بھرپور بنا دیا ہے۔ ہمیں انٹرنیٹ اور ٹیکنولاجی کا شکریہ ادا کرنا چاہیئے کیونکہ آج ہم اسی کی مدد سے ملک اور دنیا سے جڑ پا رہے ہیں اور دنیا کے کونے کونے کا علم اور سماچار ہم تک پہنچ رہا ہے۔

انٹرنیٹ کا استعمال تجارت، تعلیم ، علاج، سفر ، اسکولوں، کالجوں، روایتی پراگرام ، اور نجی زندگی کے ہر شعبے میں کر رہے ہیں۔

پرانے زمانے میں انٹرنیٹ کے ذریعے صرف ویب سائٹ سرچ کئے جاتے تھے ای میل بھیجے جاتے تھے۔ مگر آج کے اس ترقی یافتہ دور میں انٹرنیٹ کو دنیا کے ہر ایک شعبے میں ہر ٹیکنولاجی سے جڑے ہوئے کام کے لیے استعمال میں لایا جا رہا ہے۔ انٹرنیٹ اب ایک قسم سے انسان کی ضرورت بن چکا ہے۔

انٹرنیٹ نے انسانی زندگی میں جتنی سہولتیں دی ہیں اتنا ہی یہ دھیرے دھیرے انسان کے لیے خطرہ بنتا جا رہا ہے۔ آج انٹرنیٹ گھر گھر تک پہنچ چکا ہے اور بچے سے بوڑھے ہر کوئی اسکا استعمال کر رہے ہیں۔ بھلے ہی لوگ انٹرنیٹ کو تفریح کی شکل میں استعمال کر رہے ہیں یا بزنس کے لیے انٹرنیٹ کے فائدے اور نقصان کے بارے میں پتہ ہونا چاہیئے۔

30 جون 2019 کے ایک رپورٹ کے مطابق چین، ہندوستان ، امریکہ، برازیل ملک میں لوگ سب سے زیادہ انٹرنیٹ کا استعمال کرتے ہیں۔لگ بھگ دنیا کے سبھی ملکوں میں انٹرنیٹ کی سہولت موبائل کمپنیاں یا براڈ بینڈ کمپنیاں دیتی ہیں جسکے لیے وہ کمپنیاں اپنے صارف سے طے کئے گئے ڈاٹا پلان کے مطابق پیسے لیتی ہیں۔ مگر ان سبھی کمپنیوں کو انٹرنیٹ ایک بھروسےمند آرگینائیجیشن جسے انٹرنیٹ سروس پرووائڈر کہا جاتا ہے ان کے ذریعے سے ملتا ہے۔

تو چلئے جانتے ہیں انٹرنیٹ کے فائدے اور نقصان کے بارے میں۔ ان چیزوں کو جاننا کیوں ضروری ہے کیونکہ اسے ہماری زندگی میں کئی قسم کے اثرات پڑتے ہیں۔

انٹرنیٹ کے چند فائدے

1۔ آن لائن بِل

انٹرنیٹ کی مدد سے آسانی سے ہم گھر بیٹھے اپنے سبھی بلوں کو جمع کر سکتے ہیں۔انٹرنیٹ پر ہم کریڈٹ کارڈ یا نیٹ بینکنگ کی مدد سے کچھ ہی منٹوں میں بجلی، ٹیلیفون، ڈیٹیئیچ، یا آن لائن شاپنگ کے سبھی بلوں کو ادا کر سکتے ہیں۔

2۔ معلومات کا بھیجنا اور وصول کرنا

بھلے ہی آپ دنیا کے کسی بھی کونے میں بیٹھے ہوں ایک جگہ سے دوسری جگہ کئی قسم کی جانکاریاں یا اطلاع کچھ ہی سیکنڈ میں بھیج اور حاصل کر سکتے ہیں۔ آج انٹرنیٹ پر وائس کال، وائس میسیج، ای میل، ویڈیو کال، کر سکتے ہیں اور ساتھ ہی کئی قسم کی دیگر فائل بھی بھیج سکتے ہیں۔

3۔ آن لائن آفس

کچھ ایسی بڑی کمپنی ہیں جو اپنے اسٹاف کے لیے گھر بیٹھے انٹرنیٹ کے ذریعے سے کام کرنے کی آسانی دیتے ہیں۔ کئی ایسی آن لائن مارکیٹنگ اور کمیونیکیشن سے جڑی کمپنیاں ہیں جسکے اسٹاف اپنے گھر پر ہی لیپٹاپ اور موبائل فون پر انٹرنیٹ کے ذریعے سے مارکیٹنگ کا کام کرتے ہیں۔

4۔ آن لائن شاپنگ

اب لوگوں کو باربار دکان جانے کی ضرورت بھی نہیں ہے کیونکہ اب آپ گھر بیٹھے انٹرنیٹ کی مدد سے آن لائن شاپنگ کر سکتے ہیں اور بنا کوئی مول بھاؤ کئے سستے داموں میں سامان خرید سکتے ہیں۔ آن لائن شاپنگ ویب سائٹ کی مدد سے نہ صرف آپ سامان خرید سکتے ہیں بلکہ آپ چاہیں تو اپنے خاندان اور رشتےداروں کو گفٹ بھی بھیج سکتے ہیں۔

5۔ بزنس پروموشن

جیسا کہ ہم جانتے ہیں اب انٹرنیٹ گھر گھر میں اپنی جگہ بنا چکا ہے۔ اسی لئے انٹرنیٹ کے ذریعے سے اگر آپ چاہیں تو اپنے بزنس کو بہت آگے لے جا سکتے ہیں۔ دنیا کی سبھی بڑی کمپنیاں اپنے بزنس کو اور آگے لے جانے کے لیے انٹرنیٹ کی مدد لے رہے ہیں۔ دنیا کی سبھی کمپنیاں آن لائن ایڈورٹائزنگ، ایپھلئیٹ مارکیٹنگ اور ویب سائٹ کی مدد سے اپنے بزنس کو انٹرنیٹ کے ذریعے سے پوری دنیا بھر میں پھیلانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

6۔ آن لائن ملازمت

اب نوکریوں کے لیے درخواست اور جانکاری حاصل کرنا بھی بہت آسان ہو گیا ہے۔اب آپ آسانی سے گھر بیٹھے جاب پورٹل ویب سائٹ کی مدد سے کسی بھی نوکری کے بارے میں جان سکتے ہیں اور انکے ویب سائٹ پر جاکر نوکری کے لیے درخواست بھی بھر سکتے ہیں۔

7۔ فری لانسنگ

دھیرے دھیرے انٹرنیٹ پر فری لانسر بڑھتے جا رہے ہیں جو فری لانسنگ کے زریعے سے بہت اچھا پیسہ کما رہے ہیں۔ فری لانسر کا معنیٰ ہوتا ہے انٹرنیٹ پر اپنی صلاحیت کا استعمال کرکے کچھ پیسہ کمانا۔ آج انٹرنیٹ پر لوگ ویب سائٹ بناکر، آن لائن سروے، آن لائن مارکیٹنگ مارکیٹنگ، بلاگنگ، YouTube پر ویڈیو اپ لوڈ کرکے اور کئی دوسرے طریقوں سے گھر بیٹھے پیسہ کما رہے ہیں۔

8۔ تفریح

اس ترقی یافتہ زمانے میں اب انٹرنیٹ گھر گھر میں دلچسپی کا زریعہ بن چکا ہے۔ خالی وقت میں ہم انٹرنیٹ کی مدد سے گانا سن سکتے ہیں، فلمیں اور ٹیلی ویزن دیکھ سکتے ہیں۔ ساتھ ہی ہم آن لائن اپنے دوستوں سے سوشل میڈیا یا سوشل نیٹ ورکنگ ویب سائٹ پر چیٹ بھی کر سکتے ہیں۔
****
اپنی تحریر اس میل پہ ارسال کریں
lafznamaweb@gmail.com

شیئر کریں
مدیر
مصنف: مدیر
لفظ نامہ ڈاٹ کام کی اداریہ ٹیم کے مدیران کی جانب سے

کمنٹ کریں