ختمِ نبوت کے موضوع پر شاعری

ختمِ نبوت اردو شاعری اشعار

ختم ِ نبوت کے موضوع پر یوں لاکھوں کروڑوں بہت سی اعلی و ارفعی نعتیں لکھی گئیں۔ مگر اس انتخاب میں ہماری کوشش رہی کہ آپ کے ساتھ بہترین اشعار شیئر کیے جائیں۔ ختمِ نبوت کے متعلق ان اشعار کو آپ تعلیمی و دیگر ذرائع ابلاغ میں استعمال بھی کر سکتے ہیں۔

ختمِ نبوت اشعار

بنایا نبوت کا حق دار اسے
نبوت جو کی اس پہ حق نے تمام
میر حسن
۔
نبوت ختم ہے تجھ پر، رسالت ختم ہے تجھ پر​
ترا دیں ارفع و اعلی، شریعت ختم ہے تجھ پر​
۔
ترے ہی دم سے بزم ِ انبیاء کی رونق و زینت​
تو صدرِ انجمن، شانِ صدارت ختم ہے تجھ پر
۔
ہوئی ہیں ختم تجھ پر خوبیاں ساری خدائی کی
ظہور اُس پر پئے تکمیل ہے مُہرِ نبوت کا
۔
مہکتی جاتی ہیں دل کی فضائیں عود کے ساتھ
ہے نعتِ ختمِ رسل ہمنشینِ حرف و صدا

پڑھو درود کہ ہو ختم وحشت و ظلمت
لحد کی گود میں مجھ کو اتارنے والے
۔
خدا نے ختم ان پر کی نبوت بھی رسالت بھی
نبی ہیں آخری اور آخری ہے ان کی امت بھی
۔
دلائل بے بہا قرآن میں ختمِ نبوت کے
اشارہ بھی تقاضا بھی دلالت بھی عبارت بھی
۔
خدا نے ختم ان پر کی نبوت بھی رسالت بھی
نبی ہیں آخری اور آخری ہے ان کی امت بھی
۔
رُو نما کب ہو گا راہِ زیست پر منزل کا چاند
ختم کب ہو گا اندھیروں کا سفر خیر البشر

ان کی عظمت پہ خالق نے جب کہہ دیا خاتم الانبیاء
کیوں نہ مخلوق بھی پھر کہے بر ملا خاتم الانبیاء
۔
جو مانتے ہیں نبی کو وہ سب یہ کہتے ہیں
وہ آخری ہے جو آقا نے بات کی ہوئی ہے
۔
ساری مخلوق میں ایک ہی ذات پر رب کو بھی ناز ہے
خلق و خالق کے مابین ہیں واسطہ خاتم الانبیاء
۔
جن کے نقشِ قدم پر چلے تو خدا تک رسائی ہوئی
اپنے رتبہ و عظمت میں بعد از خدا خاتم الانبیاء
۔
ضیائے آخری بن کر جو نور ِ اولیں آیا
ستاروں نے لئے بوسے کہ ایسا مہ جبیں آیا

ختمِ نبوت کے موضوع پر شاعری

ﺧﺘﻢ ﺍﻥ ﭘﮧ ﮨﮯ ﺭﺳﺎﻟﺖ ﻗﺮﺁﻥ ﮐﮩﮧ ﺭﮨﺎ ﮨﮯ
ﺣﻖ ﺍﻥ ﮐﯽ ﮨﮯ ﻧﺒﻮﺕ ﻗﺮﺁﻥ ﮐﮩﮧ ﺭﮨﺎ ﮨﮯ
۔
شانہ ہائے ضو فگن کے درمیاں
جلوہ گر ،ختم نبوت کا نشاں۔۔۔۔۔۔۔۔
۔
جو آپ سے پہلے تھے وہ تھے خاص و چُنیدہ
اے ختمِ رسل ! آپ تو محبوب ہُوئے ہیں
وہ چاند ستارے تھے، رہے شب میں فروزاں
اِک مہر کا آنا تھا کہ محجوب ہُوئے ہیں
۔
ہو لطف و کرم اس امت پر کر دیجے عطا اب نورِ سحر
اب ختم ہو مشکل کی یہ شب سرکارﷺ توجہ فرمائیں

وہ شاہ بطحاﷺ ہیں، وہ آخرالزماں نبی ہیں
ہے ان پہ ختم نبوت، وہ جاوداں نبی ہیں
۔
کیا چاہیے ہے ختم الرسل کے غلام کو
کافی ہے یہ حوالہ مرے احترام کو
۔
ختم ہو جاتے جو حسن و عشق کے ناز و ادا
شاعری بھی ختم ہو جاتی نبوت کی طرح
صفی لکھنوی

شیئر کریں
مدیر
مصنف: مدیر
لفظ نامہ ڈاٹ کام کی اداریہ ٹیم کے مدیران کی جانب سے
1 Comment

کمنٹ کریں