ایک کالم بس مردوں کے لیے

کالم نگار : قمر عباس رانا

, ایک کالم بس مردوں کے لیے

خاص ان مردوں کے لیے جن کی شادی ہونے والی ہے اور شادی شدہ بھی چاہیں تو اس کو آزما سکتے ھیں
میری ماں کی ایک بہترین نصیحت جو کسی بھی مرد کی شادی شدہ زندگی کو جنّت بنا سکتی ہے بس چند لفظ
میں پوچھا ماں سے کے ماں ہسبنڈ وائف کے جھگڑے اور کئی بار ایسے ہی جھگڑوں میں دل میں میل ا سکتا ہے اور آتا بھی ہے کوئی ایسا طریقہ کے یہ جھگڑے ہی نہ ہوں اور اگر ہوں بھی تو دل میں کبھی میل نہ آئے


اماں مسکرا دی اور بولی بیٹا ایسی چھوٹی موٹی باتیں ناراضگیاں ہی زندگی کو ایکٹو رکھتی ہیں یہ نہ ہوں تو زندگی بے رنگ ہو جائے
ہاں البتہ میں تمہیں وہ طریقہ بتا سکتی ہوں کہ ایسے کتنے ہی معاملے کیوں نہ ہو جائیں دل میں خاص بیوی کے دل میں کبھی میل نہیں آئے گی


میں پوچھا اماں وہ کیا طریقہ ہے …….؟؟؟؟
تو ماں نے فرمایا
جس دن تیری شادی ہو رخصتی کا وقت آئے تو اپنے سسر ساس بیوی کے بہن بھائی کو سب سے الگ ملنا بہت نرمی مگر جوش اور محبت سے بیوی کا ہاتھ پکڑ کے ان تک لے جانا اور سسر سے بات کرتے وقت انتہائی مذہب لہجہ اختیار کرتا


میں بہت توجہ سے ماں کی بات سن رہا تھا ماں نے آگے فرمایا
سسر کو وہ حدیث سنانا جس میں نبی پاک ﷺ نے ایک مرد کے تیں باپ بتائے ہیں
ایک …….اپنا باپ
دو ……استاد
تین…..جس نے اسے بیٹی دی یعنی سسر
اور کہنا اس حدیث کی روشنی میں اپ میرے والد جیسے ہیں۔ دنیا کے رشتے سے میں آپکا داماد ہوں مگر وعدہ کرتا ہوں میں ہمیشہ آپکا بیٹا بن کے رہوں گا ۔ داماد بن کے نہیں اور جتنی مجھ میں ہمت ہے میں آپکی بیٹی کو جو اب میری ذمہداری میری عزت ہے اسکا خیال رکھوں گا کوشش کروں گا اسے کبھی بھی کوئی تکلیف نہ ہو


پھر اپنی ساس کو کہنا کے آپ ماں ہو اور ماں اپنی بیٹی کے لیے ہمیشہ فکرمند رہتی ہے آج سے یقین کر لیں آپکی بیٹی کا نصیب بہت اچھا ہے وہ ایک محفوظ ہاتھوں میں ہے ۔ کیوں کہ زندگی میں کبھی میں آپکی بیٹی کو اکیلا نہیں چھوڑوں گا اسے کبھی کوئی دکھ نہیں ملے گا
پھر ماحول کو مزاح میں بدلنا اور کہناجیسے بیٹے باپ سے ڈرتے ہیں مگر ماں سے لڑ بھی لیتے اس سے اپنی ہر بات ہر دکھ کہ لیتے ہیں ایسے ہی جب یہ کبھی [ بیوی ] مجھے ستائے گی میں آپکو بتاوں گا اور آپ کو میری طرفداری کرنی ہوگی ۔ جیسے ہر ماں اپنے بچے کی کرتی ہے ۔ اور بس اسے ہی ڈانٹنا
بھائی سے کہنا آپکو آج ایک بھائی ملا ہے جو ہمیشہ ہر اچھے اور برے وقت میں آپکے ساتھ ہو گا اور وہ آپکی بہن کا اتنا خیال رکھے گا خوشی دے گا کہ آپکو کبھی میری کوئی شکایت نہیں آئے گی۔
بہنوں سے کہنا آج سے آپکو بھی ایک اور بھائی ملا ہے جو وعدہ کرتا ہے کے آپکی بہن کو ہر خوشی دینے کی کوشش کرے گا اور آپکو ہمیشہ اپنی بہن کے برابر درجہ دے گا


بیوی کے ماں باپ بہن بھائی تب تک مطمئن نہیں ہوتے جب تک اپنی بیٹی کو اپنے گھر خوش نہ دیکھ لیں ۔ تمہارے کہے گئے الفاظ ان کے دل سے ہر فکر ہر پریشانی ہر خوف کو دور کر دے گا ۔ اور رخصتی سے پہلے ہی تمہاری بیوی کے دل سے بھی خوف کو نکال دے گا اور تمہارے سسرال والوں کو اپنی بیٹی کے بہترین نصیب کا یقین ہو جائے گا


اور شادی کی پہلی رات جو دنیا کی ہر لڑکی کے اندر اسکی سب سے بڑی خوشی ہوتی ہے اس رات تمہاری بیوی ایک نہیں سو دلہن کے برابر تمہارا انتظار کرے گی
اور میں شرط لگا کے کہہ سکتی ہوں اس رات تم سے پہلے تمہاری بیوی تمہاری گلے لگ کے رو دے گی اور وہ آنسوں سچی خوشی کے آنسو ہوں گے کیوں کے تم سب کے سامنے خاص اسکے ماں باپ بہن بھائی کے سامنے اسے مان عزت محبت دے چکے ہوگے اور اپنی ذمہداری کا احساس بھی دلا کر تم اسکے دل میں ماجود خوف کو ختم کر چکے ہو گے اور وہ یعنی تیری بیوی اپنی قسمت اور نصیب پہ رشک کرے گی اور یہی چیز کبھی اسکے دل میں تمہارے خلاف میل نہیں آنے دے گی
اماں نےمزید فرمایا بیٹا یہ دنیا مکافات ہے جو مان تم اسے دو گے وہ دوگنا ہوکر تمیں واپس ملے گا


باپ ہر لڑکی کے لیے بادشاہ ہوتا ہے اور بھائی فخر اور جب تم اسکے فخر اور بادشاہ کو عزت دو گے وہ تمھارے باپ اور بھائی کو دوگنی عزت دے گی اور پھر تمہیں کبھی نہیں کہنا پڑے گا کے میرے ماں باپ کا خیال رکھنا کیونکہ ایسا اب وہ بنا کہے کرے گی
خدا میری آپکی سب کی والدہ کو لمبی صحت والی زندگی عطا فرمائے آمین

شیئر کریں
مدیر
مصنف: مدیر
لفظ نامہ ڈاٹ کام کی اداریہ ٹیم کے مدیران کی جانب سے

کمنٹ کریں