انناس : Pine apple

, انناس : Pine apple

تحریر : عظیم لطیف

وہ پھل جو آپ کا گوشت کھاتا ہے!
پودوں کا ایک خاندان ہے Bromeliads جس میں گھاس کی طرح لمبے پتے اور پھول بنتے ہیں۔ یہ براعظم جنوبی امریکہ کا خاندان ہے اور اس خاندان کی کوئی 3600 قسمیں ہیں۔زیادہ تر سجاوٹی پودے کے طور پر استعمال ہوتی ہیں لیکن ان میں چند ایک ہی ہیں جو پھل کے طور پر استعمال ہوتے ہیں اور ان میں سے ایک ہے انناس۔
انناس جنوبی امریکہ کے ملک پیراگوئے کے دریا, دریائے پیراگوئے کے کنارے پہلی بار نظر آیا تھا۔ وہاں سے مقامی لوگوں نے اس کو مشہور کیا اور اسکی پورے براعظم میں کاشت ہونے لگی بلکہ یہیں سے قریبی براعظم شمالی امریکہ میں بھی شہرت پہنچ گئی۔ 1500 عیسوی کے آخر میں کولمبس براعظم امریکہ دریافت کرتے وقت جب یہاں پہنچا تو پہلا یورپی تھا جس نے یہ پھل چکھا۔ یہاں سے وہ یہ سوغات واپس یورپ لے کر گیا اور وہاں اس پھل کے چرچے ہوگئے۔ یورپ سے 1550 میں پرتگیزی تاجر اسے انڈیا میں راجہ مہاراجوں کے پاس لے کر آئے اور اس طرح ہندو پاک میں یہ پھل مقبول ہوا۔
انناس دراصل اس کا سائینسی نام ہے۔ اسکا پورا سائینسی نام ananas comosus ہے۔ یہ نام دراصل Tupi زبان کی مرہون منت ہے جو جنوبی امریکہ میں قبائیلی لوگ پہلے وقتوں میں بولا کرتے تھے۔ لفظ انناس کا مطلب ہے ؛چیڑ (pine)
چونکہ اسکی شکل Pine کی طرح تھی اور انتہائی میٹھا تھا، گوروں نے اس کا نام Pine apple دے دیا۔ یہ ٹراپیکل علاقے کا پھل ہے اس لئیے اسکے سب سے بڑے پیداواری ملک Costa Rica, برازیل، فلپائین اور ان ڈونیشیا ہیں۔ یاد رکھیں ٹراپیکل وہ علاقے ہوتے ہیں جہاں سارا سال موسم گرم اور نمدار رہے بارشیں خوب ہوتی ہوں،
یہ پھل دراصل ایک جھاڑی نما پودے پر لگتا ہے اور اسکے بہت سارے چھوٹے موٹے پھول ایک ہی جگہ پر اگتے ہیں۔ تقریباً ایک سو سے دو سو تک پھول اگتے ہیں اور یہ تمام پھول ایک ہی جگہ پر اکھٹے پھل میں تبدیل ہوجاتے ہیں یعنی انناس ایک پھل نہیں ہوتا بلکے بہت سارے چھوٹے چھوٹے پھلوں کا مجموعہ ہوتا ہے۔ اسی لئیے اسکی بیرونی جلد پہ بہت سارے کٹ نظر آتے ہیں۔ اس پھل کے کیا کیا فائدے ہیں آئیے دیکھتے ہیں:
۰ پائن ایپل میں 86% پانی ہوتا ہے اسکے علاوہ پوٹاشییم بڑی مقدار میں موجود ہے۔ جو کہ پانی کی کمی کو پورا کرنے لئیے بہترین ہیں۔ پوٹاشئیم جسم میں بطور الیکٹرلائیٹ کام کرتا ہے اور دل کی صحت کے لئیے بھی اچھا ہے۔
۰ اس میں بہت بھاری مقدار میں وٹامن سی موجود ہے جو جسم میں قوت مدافعت کو بہتر کرتا ہے.
۰ اس میں Fat انتہائی کم ہوتا ہے اور کیلوریز بھی انتہائی کم۔ اس لئیے جلدی ہضم ہونے والی شے ہے۔ 
۰ اس میں flavonoids اور phenolic acid دو قسم کے antioxidants موجود ہیں۔ اینٹی آکسیڈینٹس بہت سارے پھلوں میں ہوتے ہیں۔ یہ جسم کو کینسر سے بچاتے ہیں، خون صاف کرتے ہیں، جلد خوبصورت، ناخن بال خوبصورت، دل کی شریانیں کھولتے ہیں۔ منہ کے داغ دھبے ایکنی وغیرہ دور کرتے ہیں۔
۰ انناس میں ایک خاص قسم کا کیمیکل(enzyme) پایا جاتا ہے جسے bromelain کہتے ہیں۔ آپ نے اگر انناس کھایا ہو تو محسوس کریں گے اسکے بعد آپ کی زبان اور منہ کا اندر کا حصہ ہلکا ہلکا سا محسوس ہوتا ہے۔ دراصل انناس میں موجود یہ Bromelain پروٹین کو ہضم کرتا ہے۔ خدا نے اس پھل میں یہ خاصیت اسلئیے رکھی ہے کہ اگر اس پر جراثیم حملہ کریں تو یہ ان کو کھا ڈالے۔ اس لئیے یہ پیٹ کے کیڑوں کے لئیے بھی بہت اچھا پھل ہے۔ ہماری انگلیاں جہاں لگتی ہیں وہاں ہمارے فنگر پرنٹس رہ جاتے ہیں۔ یہ دراصل ہمارے جسم کی کھال سے نکلنے والے تیل اور مردہ سیلز سے پرنٹس بنتے ہیں۔ لیکن حیرت انگیز طور پر جو لوگ انناس کے کھیتوں میں کام کرتے ہیں ان کے فنگر پرنٹس کسی چیز پر باقی نہیں رہتے کیونکہ bromelain پورے پودے میں موجود ہے اور یہ فنگر پرنٹس کے مردہ سیلز کھا کر اس کے نشان مٹا دیتا ہے۔ پروٹین کو ہضم کرنے والی خاصیت کی وجہ سے بہت سارے ممالک میں انناس گوشت کے ساتھ پکتا ہے تاکہ اسے قابل ہضم بنادے۔ یعنی گوشت کے ساتھ انناس کے چند ٹکڑے اسے آپ کے پیٹ میں بہترین طریقے سے ہضم کریں گے۔
۰انناس ایک قدرتی درد کی دوا Pain Killer ہے۔ اس میں موجود یہی bromelain درد کش خاصیت anti-inflammatory بھی رکھتا ہے اور جوڑوں کے درد کے لئیے بھی آزمودہ ہے۔
۰ اس کو صفائی کے ایجنٹ کے طور پر بھی استعمال کیا جاتا رہا ہے۔ یہ کشتیوں کے لمبے سفروں کا خاص پھل ہے۔ اور اس کے رس کو ریت میں ملا کر کشتیوں کی لکڑی کو بہترین دھویا جاتا رہا ہے۔
انناس کو کیسے اگایا جائے؟
انناس چونکہ ٹراپیکل علاقے کا پھل ہے اس لئیے اسکو اگانا تھوڑا محنت طلب کام ہے۔ انناس کے اوپر جو اس کا تاج ہوتا ہے اسے گول مول مروڑ کر اتار لیں اور کچھ دن ایسے ہی رکھ دیں۔ ایک بڑے گملے میں ریت اور کمپوسٹ سے مکس مٹی ڈالیں گملے کے نیچے سوراخ ہوں تاکہ پانی زیادہ کھڑا نہ رہے۔ اس میں انناس کے تاج کو لگادیں ۔لگانے سے پہلے تاج کے نچلے تھوڑے سے پتے اتار لیں تاکہ ٹھیک طرح لگے اور جڑ بنے۔ اسے دھوپ میں چھائوں والی جگہ پر رکھیں اور مٹی کو خشک نہ ہونے دیں۔ سردی نہیں برداشت کرسکتا سردیوں میں اندر رکھنا پڑے گا۔ دو سال میں تقریباً پودا پھل بنائے گا۔ بڑے پیمانے پر گرین ہائوس کے زریعے اگایا جاسکتا ہے۔ اسے زیادہ تر Crowning کے زریعے ہی اگایا جاتا ہے اور بیج صرف Breeding یعنی نئی نسلوں کی پیداوار کے لئیے آزمائے جاتے ہیں۔ بیج چونکہ پھل کی کوالٹی خراب کرتا ہے اس لئیے انناس والے کھیتوں کی پولینیشن ہونے سے بچایا جاتا ہے۔ اس کا سب سے بڑا Pollinator , Humming Bird ہے۔ کسی زمانے میں امریکہ کا جزیرہ ہوائی ساری دنیا کو یہ پھل مہیا کرتا تھا اور وہاں Humming Bird لانے پر پابندی تھی۔
انناس اور اس کے خاندان کے تقریباً تمام پودے ان کے پتے ایک مرکزی تنے سے شروع ہوکر چاروں طرف ایک crown کی طرح پھیلتے ہیں جسکی وجہ سے ان کے کونوں یا پیندوں میں بارش کا پانی جمع ہوجاتا ہے۔ قدرت نے ان میں یہ خاصیت رکھ کے دراصل دنیا کے بہت سارے ننھے جانوروں کو گھر دیا ہے۔ Salamander اور Tree Frogs جو کہ جنوبی امریکہ کے خاص جانور ہیں انکی خوبصورت قسمیں صرف انہی پانیوں میں پائی جاتی ہیں۔
انناس کو چاہے ایک سجاوٹی پودے کے طور پر گھر میں رکھیں یا پھل کے حصول کے لئیے۔ لیکن ہے یہ دیکھنے اور کھانے لائق!



شیئر کریں
مدیر
مصنف: مدیر
لفظ نامہ ڈاٹ کام کی اداریہ ٹیم کے مدیران کی جانب سے

کمنٹ کریں