سائیکالوجسٹ ، سائیکیٹرسٹ اور سائیکو تھراپسٹ میں فرق

نفسیات psychology

سائیکریٹرسٹ کا تعلق دماغی بیماریوں سے ہے ۔ اگر مریض کو دماغی عارضہ ہے دماغی کینسر یا کسی وجہ سے چوٹ لگ جائے تو سائیکیڑسٹ ہی دماغ کے مرض کا پتا لگا کر دوا یا آپریشن کے ذریعے اسکا علاج کر سکتا ہے ۔ جبکہ سائکالوجسٹ کا تعلق نفسیاتی امراض کے ساتھ ہوتا ہے ۔ نفسیات سے مراد آپ کے حرکات و سکنات، آپ کے سوچ کا مقام. سائیکوتھراپی کرنا سائکالوجسٹ کا ہی کام ہے جس میں وہ مریض کے لئے مخصوص ماحول تیار کروا کر ان کی نفسیات جاننے کی کوشش کرتا ہے اور اسی کے مطابق سائیکو تھراپی کرتا ہے.. سائیکو تھراپی کا ایک طرح سے مطلب باتوں کے ذریعے علاج کرنا بھی ہے۔

سائکیٹرسٹ، سائکولوجسٹ، اور نیورولوجسٹ یہ دماغی امراض کی الگ الگ شاخیں ہیں، اور انکا طریقۂ علاج کچھ مختلف ہوتا ہے، نیورولوجسٹ دماغ میں یا نروس سسٹم بتمام میں کسی فیزیکل ڈیمج، یا کیمیائی ردو بدل کے علاج کی فیلڈ ہے، مثلاً الزائمرز، پارکنسنز، کوئی دماغی چوٹ، فالج، نروز کا دب جانا یا ناکارہ ہو جانا،

سائکیٹرسٹ عموماً دواؤں سے علاج کا طریقہ اپناتے ہیں، اور ایسے ذہنی امراض جن سے انسان کے نارمل فنکشن کرنے کی صلاحیت کم یا زائل ہو جائے، مثلاً ڈیپریشن، اینگزائٹی، شیزوفرینیا، مینیا، جیسے امراض انکا علاج دواؤں کے زریعے کرتے ہیں،

سائکولجسٹ ڈیپریشن، اینگزائٹی، بیہیوئر ماڈیفیکیشن پر کام کرتے ہیں، اور طریقۂ علاج کاؤنسلنگ سے ہوتا ہے،

پر اب ان تمام فیلڈز کے کامبینیشن ایکسپرٹس بھی ہوتے ہیں جیسے کہ سائکونیورولوجسٹ، سائکوتھیریپسٹ وغیرہ۔ اسے اگر آسان الفاظ میں سمجھنے کی کوشش کی جائے تو یہ کہنا غلط نہ ہوگا کہ سائیکریٹرسٹ دماغ کے ھارڈوئیر کا کام کرتا ہے جب کہ سائکولوجسٹ دماغی سوفٹوئیر کا کام کرتا ہے

شیئر کریں
مدیر
مصنف: مدیر
لفظ نامہ ڈاٹ کام کی اداریہ ٹیم کے مدیران کی جانب سے

کمنٹ کریں