شوگر کیوں ہوتی ہے؟ بچائو کا طریقہ

شوگر کیسے ہوتی ہے؟ احتیاطی سائنسی بچائو تدابیر

شوگر کیوں ہوتی ہے اور اس سے کیسے بچا جا سکتا ہے؟ یہ ایک ایسی بیماری ہے جو آج کل بہت تیزی سے نوجوانوں اور زیادہ تر ادھیڑ عمر افراد میں پھیل رہی ہے۔ یہ بیماری خواتین اور مردوں میں یکساں طور پر دیکھی جا رہی ہے۔

ہمارا پینکریاز کسی بھی وجہ سے انسولین پیدا کرنا بند کر دے کم کر دے تو شوگر لاحق ہو جاتی ہے اور ابتدائی سٹیج میں تشخیص ہو جائے تو علاج ممکن ہے اس کے علاوہ ایکسر سائز واک سلاد سٹریس فری لائف اور فریش نیچرل ڈائٹ شوگر سے بچا سکتی ہیں۔

فاسٹ فوڈز اور بیکری آئٹمز ہمارے تمام وائٹل آرگنز کو متاثر کرتے ہیں ۔۔۔کیونکہ ان کا ٹوٹل میکنزم چینج ہو جاتا ہے بیکری پراسیس میں۔۔۔۔بہت زیادہ فاسٹ فوڈ کینسر ، السر کڈنی فیلیر اور شوگر کی وجہ بنتے ہیں۔ باقی سٹریس ٹینشن ڈیپریشن ایسے نفسیاتی عوارض ہیں جو جسمانی بیماریوں کی وجہ بنتے ہیں بلکہ جان لیوا بھی ہوتے ہیں جیسا کہ کسی جوان بہن بھائی عزیز کی اچانک ڈیتھ سے والدہ بہن بھائی کو شک کی وجہ سے ہارٹ اٹیک۔۔۔۔۔

شوگر جینیاتی بیماری ہے جسے ہونا ہو اُسے ہو کر رہتی ہے وسیم اکرم کو ہی دیکھ لیں۔ البتہ موٹے اور بسیار خور کا اس مرض میں مبتلا ہونے کا چانس زیادہ ہوتا ہے۔ یہ بھی غلط ہے کہ چالیس سال کے بعد یہ بیماری آتی ہے۔ چند ماہ کے بچے کو بھی ہو سکتی ہے اور ارگرد نظر دہرائیں تو ٹائپ ون کے بہت سے مریض نظر آئیں گے جن میں شوگر کی تشخیص ٹین ایج میں ہوئی۔ ٹائپ ٹو کے بھی بہت مریض ہیں جنہیں پچیس سے تیس سال کی عمر کے دوران اس مرض نے آن گھیرا۔

شوگر کی کئی وجوہات ھو سکتے ھیں جیسا کہ جینیاتی تبدیلیاں شوگر کی باعث بن سکتی ھے یا موٹاپا بھی شوگر کا باعث بن سکتی ھے جیسا کہ موٹاپے کے دوران ایڈیپوز سیلز سائٹوکائن خارج کرتے ھیں یہ سائٹوکائن سیلز کی ریسپٹرز کیساتھ بائنڈ ھو کر جینس کائینز خامرے کو ایکٹویٹ کرتےھیں یہ خامرے انسولین ریسپٹر 1 لمحیات کو ناکارہ بناتے ھیں جس کی وجہ سے انسولین کی سگنل ٹرانسڈکشن کا عمل روک جاتاھے جس کے نتیجے میں جسم کے سیلز انسولین کو مزاحمت پیش کرتےھیں جس سے شوگر ھو جاتاھے اس لئے موٹاپے سے پرہیز کیا جائے۔

ایسے مریض جو موٹاپے کا شکار نہ ھو اس میں شوگر کا کا مرض آٹوایمیون ڈسارڈر کی وجہ سے ھوتاھے جس کے کیدوران مدافعتی نظام کے خلئے کسی وجہ سے سیلف ریکٹیو بن جاتےھیں اور یہ خلئے اب پنکریاز کے beta cells کو ختم کر دیتے ھیں جس کے نتیجے میں type 1 شوگر ھو جاتاھے

ٹائپ ٹو شوگر کے مریض انسولین کی بجائے دوا استعمال کر سکتے ہیں اگر دوا سے کنٹرول ہو رہی ہو البتہ ٹائپ ون کے مریضوں کے لئے انسولین ضروری ہے۔

شیئر کریں
مدیر
مصنف: مدیر
لفظ نامہ ڈاٹ کام کی اداریہ ٹیم کے مدیران کی جانب سے

کمنٹ کریں