روٹی پر اشعار

جلتا ہے کہ خورشید کی اک روٹی ہو تیارلے شام سے تا صبح تنور شب مہتابولی اللہ محب اسے کھلونوں سے بڑھ کر ہے فکر روٹی کیہمارے دور کا بچہ جنم سے بوڑھا ہےعبدالصمد تپشؔ بیسن کی سوندھی روٹی پر کھٹی چٹنی جیسی ماںیاد آتی ہے! چوکا باسن چمٹا پھکنی جیسی ماںندا فاضلی کھڑا ہوں… Continue reading روٹی پر اشعار

لفظ گمنام پہ اشعار

جب چھیڑتی ہیں ان کو گمنام آرزوئیںوہ مجھ کو دیکھتے ہیں میری نظر بچا کےعلی جواد زیدی وہ ایک شخص کہ گمنام تھا خدائی میںتمہارے نام کے صدقے میں نامور ٹھہراحمید کوثر جمی ہے گرد آنکھوں میں کئی گمنام برسوں کیمرے اندر نہ جانے کون بوڑھا شخص رہتا ہےاظہرنقوی گمنام ایک لاش کفن کو ترس… Continue reading لفظ گمنام پہ اشعار

غرور پر شاعری

آسماں اتنی بلندی پہ جو اتراتا ہےبھول جاتا ہے زمیں سے ہی نظر آتا ہےوسیم بریلوی شہرت کی بلندی بھی پل بھر کا تماشا ہےجس ڈال پہ بیٹھے ہو وہ ٹوٹ بھی سکتی ہےبشیر بدر ادا آئی جفا آئی غرور آیا حجاب آیاہزاروں آفتیں لے کر حسینوں پر شباب آیانوح ناروی وہ جس گھمنڈ سے… Continue reading غرور پر شاعری