محمد جاوید انور

محمد جاوید انور

ویسے کا ویسا

محمد جاوید انورlafznamaweb@gmail.com جی چاہتا ہے اُس سے بات کروںپُوچھوں کہ کیسی ہو؟سوچتا ہُوں کہ سب ٹھیک چل رہا ہُوا، تو جو ایک واہمہ ہے کہ میری کچھ اہمیت تھی وہ بھی نہ رہے گاوہ تو ویسی کی ویسی ہو گیٹ...

محمد جاوید انور

نیرنگی

افسانہ نگار : محمد جاوید انورlafznamaweb@gmail.com شگُفتہ نے اپنی پتلی سی چوٹی مکمل کر کے آخری گرہ لگائی ،اسے پیچھے پھینکا اور حسب عادت سر کو جھٹکا۔اس کا اکہرا لامبا بدن جیسے پتلی ٹانگوں کی بیساکھیوں...

محمد جاوید انور

مہربانی

افسانہ نگار: محمد جاوید انورlafznamaweb@gmail.com لکڑی کی چوکی پر کھڑا اجُوحیران تھا کہ نذیر نائی آج کچھا اتار کر اس کی حجامت کیوں بنائے گا۔ صبح ہی سے حویلی میں رونق معمول سے کچھ زیادہ تھی ۔ برادری و...

محمد جاوید انور

غرض

افسانہ نگار: محمد جاوید انورlafznamaweb@gmail.com مجھے اس سے غرض نہیں کہ تمہارا اور کس سے کیا تعلق ہے۔ میں صرف اس سے غرض رکھتا ہوں اور اسی میں خوش ہوں کہ تم مجھ سے متعلق ہو۔فرخ کی آواز میں تیقن نے فر...

محمد جاوید انور

دشتِ وحشت

افسانہ نگار: محمد جاوید انورlafznamaweb@gmail.com وہ مجھے سرحد تک جانے والی ٹرین کی منتظر ریلوے کے مخصوص بنچ پر بیٹھی ملی۔بڑے اسٹیشن پر بہت رونق تھی۔ ہفتے میں دوبار سرحد تک ، جانے والی گاڑی نے علی الص...

محمد جاوید انور

دروازہ

افسانہ نگار : محمد جاوید انورlafznamaweb@gmail.com “کہہ دیا نا میں نے لکھنا چھوڑ دیا ہے۔”اس کے لہجے میں مایوسی ، تلخی اور احتجاج سب ملے ہوئے تھے ۔آج جب وہ پاؤں گھسیٹتا، سر جھکائے ، ملگجے...

محمد جاوید انور

برگد

افسانہ نگار: محمد جاوید انورlafznamaweb@gmail.com وہ تین دیہات کے عین وسط میں زمانوں سے چھایا ایک انتہائی شاندار گھنا گھنیرا، چھتنار برگد تھا۔اس کی موٹی،لمبی اور مضبوط شاخوں نے چاروں طرف ایسا دبیز ،نر...

محمد جاوید انور

اُجلے پاؤں، میلے پاؤں

افسانہ نگار : محمد جاوید انورlafznamaweb@gmail.com وُہ میری قطار سے اگلی قطار میں میرے سامنے سے دائیں والی کرسی پر دونوں پاؤں اپنی رانوں تک سکیڑ کر سیٹ پر رکھے بیٹھی تھی۔آلتی پالتی مارے نہیں بلکہ اپ...

محمد جاوید انور

آخری گجرا

افسانہ نگار: محمد جاوید انورlafznamaweb@gmail.com اور پھر ہماری شادی ہو گئی۔رضیہ میرے خوابوں کی شہزادی تھی۔میں کیا اور میرے خواب کیا۔لیکن خواب تو سبھی کے ہوتے ہیں اور خوابوں کی شہزادیاں بھی۔میرے پاس ت...