نقش قدم ۔ سو الفاظ کی کہانی

افسانچہ نقش قدم سیف الرحمن ادیؔب رات کے بارہ بجے گھنٹی بجی۔میں ماضی میں چلی گئی، جب بارہ اور ایک بجے گھرکی گھنٹیاں بجا کرتی تھیں۔ میرا شوہر شراب کے نشے میں دُھتگھر میں داخل ہوتا، گندی گالیوں کی پوری لغت مجھے سناتا،میرے والدین سمیت پورے خاندان کو یاد کرتا،اور اس کے بعد مار پیٹ… Continue reading نقش قدم ۔ سو الفاظ کی کہانی

زندگی کا جلتا الائو

زین العابدین خاں چار بجے شام کا وقت تھا۔قاسم خاں کو کِسی نے بتایا تھا کہ زبیدہ دادی کی طبیعت بہت خراب ہے ،بچنے کی اُمید کم ہے ۔زبیدہ دور کے ایک گائوں سیتا پور میں تھی ۔وہ تھوڑی دیر کے لیے پریشان ہوا ،پھر اُس نے اپنے باکس کے پُرانے کاغذوں سے زبیدہ کی… Continue reading زندگی کا جلتا الائو

تتلیاں آواز دیتی ہیں

افسانہ نگار : نصرت اعوان شام دور کھڑی شرما رہی تھی ۔آسمان سورج کی آخری تمازت سے گلابی ہونے لگا تھا۔۔ پرندوں کے جھنڈ اپنے اپنے ٹھکانوں کی طرف محو پرواز تھے۔۔ہر روز نماز عصر کے بعد یہ منظر چاے کا کپ ہاتھ میں لیے بالکنی سے دیکھنا میرا معمول تھا۔میں کچھ دیر کے لئے… Continue reading تتلیاں آواز دیتی ہیں

افسانہ :ہمیشہ دیر ھوجاتی ھے مجھ سے

افسانہ نگار : رفعت مہدی حمزہ کو رخصت کرنے کے بعد چند ایک کام نمٹا کر میں کھڑکی کے قریب کرسی پر بیٹھ گئی۔اور اپنے واحد دوست اس نیچی چھت ، گول برآمدے والے زرد مکان کو پر تجسّس نگاھوں سے دیکھنے لگیجی ہاں،، اس پورے علاقے میں جس چیز نے مجھے متاثر کیا ھے… Continue reading افسانہ :ہمیشہ دیر ھوجاتی ھے مجھ سے

شجر ممنوعہ کی چاہ میں

افسانہ نگار : پرویز شہریار اُس نے کہا تھا۔’’ازدواج کی ادلابدلی سے فرسودہ رشتے میں نئی بہارآجاتی ہے ،جس سے رشتے کی جڑ مضبوط ہوتی ہے اور محبت کے بوسیدہ شجر میں نئی کونپلیں پھوٹنے لگتی ہیں۔‘‘اُس نے در اصل مجھ سے جھوٹ کہا تھا۔’’میں اُس شجر ِممنوعہ پر چڑھنا نہیں چاہتی تھی۔ مجھے اِس… Continue reading شجر ممنوعہ کی چاہ میں

عجیب لڑکی

افسانہ نگار : محمد جاوید انور ’’ نہیں بھائی۔ میں نہیں مانتی۔ میں افسانہ لکھ رہی ہوں یا الجبرے کا سوال حل کر رہی ہوں جو آپ مجھے فارمولے پر فارمولاسکھانے سمجھانے پر تلے ہیں۔ شروع کی لائن پٹاخہ ہونی چاہیے، پھر زینہ زینہ کہانی آگے بڑھے ، کردار محدود ہوں، جزئیات پر زیادہ ارتکاز… Continue reading عجیب لڑکی