زمین پر پانی کہاں سے آیا؟

زمین پر پانی کہاں سے آیا؟ جبکہ زمین جس وقت وجود میں آئی تھی اس وقت یہ انتہائی گرم تھی اور اس زمانے میں زمین پر پانی کی موجودگی ہونے کی کوئی صورت ہی نہیں پائی جاتی تھی۔

زمین پر پانی کہاں سے آیا

نظام شمسی کی تشکیل کے بعد زمین کے مدار کے آس پاس لاکھوں چھوٹے موٹے شہابیے موجود تھے جو اب زمین میں ضم ہو چکے ہیں۔ اس کے علاوہ آج سے چار ارب سال پہلے بڑے سیاروں کے مدار سٹیبل نہیں تھے۔ اس وقت مشتری اور زحل ایک ریزوننس میں آگئے یعنی زحل کا ایک مداروی چکر عین اس عرصے میں پورا ہوتا جس عرصے میں مشتری کے سورج کے گرد دو چکر پورے ہوتے۔ اس کا نتیجہ یہ ہوا کہ مشتری اور زحل بار بار ایک ہی مقام پر ایک دوسرے کے پاس سے گذرتے- کروڑوں سال کی اس ریزوننس کا نتیجہ یہ ہوا کہ مریخ اور مشتری کے مداروں کے درمیان ایسٹرائیڈ بیلٹ میں جو کروڑوں شہابیے موجود ہیں ان میں سے کئی اپنا راستہ بدلنے لگے اور ان میں سے اکثر تو مشتری پر جا گرے لیکن بہت سے زمین، مریخ، اور زہرہ پر بھی جا کر گرے- ان شہابیوں سے ان سیاروں پر کثیر مقدار میں پانی آیا جو زمین پر سمندر کی صورت میں آج بھی موجود ہے

وقت کے ساتھ ساتھ مشتری اور زحل کی ریزوننس ختم ہو گئی اور اس کے نتیج میں شہابیوں کے بکھر جانے کا امکان بھی انتہائی کم ہو گیا۔ اب جو اکا دکا شہابیہ ایسٹرائیڈ بیلٹ سے خارج ہوتا ہے تو زیادہ تر وہ مشتری کی کشش ثقل کے زیر اثر مشتری پر جا گرتا ہے۔ اس لیے اب بہت کم شہابیے زمین کی طرف آتے ہیں

اب یہاں یہ سوال پیدا ہوتا ہے کہ اگر بہت کم شہابیے زمین کی طرف آتے ہیں تو زمین پر پانی ختم کیوں نہیں ہو رہا.کیا زمین پر پانی کا کوئی اور سورس بھی ہے ؟

شہابیوں پر پانی نظام شمسی کی تشکیل سے پہلے سے موجود تھا۔ جب بھی کوئی ستارہ سپر نووا ہو کر پھٹتا ہے تو اس کے ارد گرد کثیر مقدار میں پانی کے مالیکیول بنتے ہیں۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ ستاروں میں پھٹنے سے پہلے کثیر تعداد میں ہائیڈروجن اور آکسیجن کے مرکزے موجود ہوتے ہیں۔ سپر نووا کا دھماکہ اس قدر شدید ہوتا ہے کہ اس کی توانائی سے ہائیڈروجن اور آکسیجن کے ایٹم آپس میں مل جاتے ہیں اور یوں پانی کے مالیکیول تشکیل پاتے ہیں

شیئر کریں
ذیشان ساجد راولپنڈی، پاکستان سے تعلق رکھنے والے شاعر ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ سائنس فکشن اور دیگر موضوعات پر کام/مضامین بھی لکھتے ہیں۔

کمنٹ کریں